خواتین و اطفال

اگر آپ بچوں کو موبائل فون دے رہے ہیں تو وقت سے پہلے ہوشیارہوجائیں!

ممبئی: اگر آپ خاموش رہنے کے لئے اپنے بچوں کو موبائل فون دے رہے ہیں تو وقت سے پہلے محتاط ہوجائیں… کیونکہ اب ایک ایسی تحقیق سامنے آئی ہے جو والدین کی نیند اُڑاسکتی سکتی ہے جو اپنے بچوں کو گیجٹ دیتے ہیں۔ والدین کو سمجھنا چاہئے کہ یہ خطرے کی گھنٹی ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ایک سروے میں بتایا گیا ہے کہ موبائل فون کی وجہ سے بچے زیادہ پریشان ہو رہے ہیں۔ دو سے تین سال کے بچوں کو سمارٹ فون دینا خطرناک ہوتا جارہا ہے۔ امریکی سائنس دانوں کی ایک رپورٹ کے مطابق چھوٹے بچوں کے اسمارٹ فونز پر کارٹون دیکھنے کے سلوک کے ساتھ ساتھ والدین کب تک بچوں کو اسمارٹ فون استعمال کرنے کی اجازت دیتے ہیں اس پر ایک تحقیق کی گئی۔ مطالعے کے دوران بچوں کو موبائل دینے سے پہلے ان کی خاموش کرایاگیا اور کچھ دیر کے لئے ان سے موبائل فون لے لیا گیاجس کے بعد ان کا غصہ بڑھتا گیا۔
تحقیق میں بتایا گیا کہ جب وہ ایسا کرتے ہیں تو بچے زیادہ جارحانہ اور ظالمانہ ہوجاتے ہیں۔ سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ والدین کو اپنے بچوں کو گیجٹ سے دور رکھنے کی کوشش کرنی چاہئے۔ تاکہ عوام میں وہ اپنے غصے پر قابو پاسکیں۔ اس رپورٹ سے والدین کو کچھ تجاویز بھی پیش کی گئیں۔

ایسا کرنے سے گریز کریں؟

* بچوں کو موبائل پر آڈیو اور ویڈیو دکھانے سے گریز کریں
* 18 ماہ سے کم عمر بچوں کو گیجٹ مت دیں
* دن کے دوران 2 سے 5 سال کی عمر کے بچوں کو ایک گھنٹے سے زیادہ وقت تک گیجٹ استعمال کرنے کی اجازت نہ دیں
* والدین اس بات کو ذہن میں رکھیں کہ ان کے بچے کیا ویڈیوز دیکھتے ہیں
* کھانے یا سفر کے دوران بچوں کو ویڈیوز دکھانے سے گریز کریں

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: انتباہ:مواد محفوظ ہے