مہاراشٹر

کھام گاؤں: انجمن کی نہیں شروع ہوئی ابتدائی جماعتیں ; انتظامیہ کی لاپرواہی، بد نظمی کے سبب طلباء تعلیم سے دور

کھام گاؤں (واثق نوید):حکومت اور ضلعی تعلمی محکمہ کی اجازت اور حکم کے باوجود انجمن ہائی اسکول کے انتظامیہ نے ابتدائی جماعتوں کی تعلیم شروع نہیں کی جس کی وجہ سے طلباء تعلیم سے مزید محروم رہیں گے،اس تعلق سے سرپرستوں میں شدید ناراضگی پائی جارہی ہے۔
واضح رہے کہ گزشتہ دو سالوں سے کورونا بحران کی وجہ سے ملک و ریاست میں تعلیمی ادارے بند تھے۔ کورونا پر قابو پانے کے بعد حکومت نے مختلف مرحلوں میں الگ الگ جماعتوں کی تعلیم شروع کرنے کا حکم دیا۔ تھا پہلے دور میں شہری علاقوں میں آٹھویں جماعت سے بارویں جماعتوں تک اور دیہی علاقوں میں پانچویں سے بارویں جماعت تک تعلیم شروع کرنے کی اجازت دی تھی۔ دوسرے مرحلے میں حفاظتی انتظامات و اقدامات کے ساتھ شہری علاقوں میں پہلی سے ساتویں جماعت تک دیہی علاقوں میں پہلی سے چوتھی تک تعلیم شروع کرنے کا حکم دیا۔ اس ضمن میں ریاستی محکمہ تعلیم کے اعلی محکمہ اور ضلع ایجوکیشن افسر نے بھی یکم دسمبر سے تعلیمی ادارے شروع کرنے کی اجازت و حکم دیا تھا۔ کھام گاؤں شہر میں نگر پریشد ، کئی اردو، مراٹھی ، انگلیش،و دیگر پرائیویٹ ،اداروں نے تعلیمی سرگرمیاں شروع کردی۔ لیکن علاقے کی سب سے قدیم و وسیع وعریض تعلیمی ادارے انجمن ہائی اسکول و جونئیر کالج نے 4 دن گذر جانے کے باوجود آج تک پانچویں سے ساتویں تک کی تعلیمی سرگرمیاں شروع نہیں کی۔ جس کی وجہ سے طلباء کا تعلیمی نقصان ہورہا ہے۔ ایک اقلیتی تعلیمی ادارے کی اقلیتی طلباء کی تعلیم کے تعلق سے اس بے حسی سے شہر کے سرپرستوں میں شدید ناراضگی پائی جارہی ہے۔ ماضی کے باوقار تعلیمی ادارے کی موجودہ لاپرواہ انتظامیہ کی وجہ سے جو بدنامی ہورہی ہیں اس سے ہمدردان قوم و سابق طلباء انجمن کو سخت کوفت ہورہی ہے۔ سرپرستوں کی مقامی محکمہ تعلیم سے درخواست ہے کہ اس جانب توجہ دیکر ابتدائی جماعتوں کی بھی تعلیم شروع کی جائے۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!