اہم خبریں

دہلی میں ہندو سینا کی گری ہوئی حرکت ،اکبر روڈ پر لگائے متنازعہ پوسٹر ؛ روڈکا نام بھی کیا تبدیل ؛ پبلسٹی اسٹنٹ یا کوئی اور وجہ؛ پڑھیں خبر

نئی دہلی: ہندو سینا نے دہلی کے اکبر روڈ پر مختلف مقامات پر ‘اکبردی گریٹ’ کے بارے میں متنازعہ پوسٹر اور ہورڈنگ لگائے ہیں۔ پوسٹر میں لکھا گیا ہے کہ اکبر جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ بہت اچھا تھا،دراصل وہ ایک بلتکاری اور آتنک وادی ہے۔ اپنے دور حکومت میں اکبر نے ہزاروں ہندو لڑکیوں کے ساتھ عصمت دری کی تھی اور ہندوؤں کا قتل عام بھی کیا تھا۔ اسی لئے ہندو سینا نے یہ پوسٹر لگائے ہیں۔

ہندو سینا کارکنوں نے دہلی پولیس کی بیریکیٹنگ پربھی پوسٹر چسپاں کر کے اکبر روڈ کا نام بلتکاری اکبر مارگ اور آتنک وادی اکبر مارگ لکھ دیا ہے۔ پوسٹر پر ہندو سینا اور سرجیت یادو کا نام چھپے ہوئے ہیں۔

اس حرکت کےبعد یہ سوال بھی پیدا ہوتا ہے کہ جب ملک کورونا جیسی وبا سے لڑ رہا ہے تو ایسے وقت میں ایسے متنازعہ پوسٹر لگانے کی کیا ضرورت تھی؟ کیا یہ صرف پبلسٹی اسٹنٹ کے لئے ہے یا کوئی اور وجہ ہے؟ جس میں اکبر کو بلتکاری اور آتنک وادی بتایا گیا ہے۔ اس طرح کے پوسٹر ہندو سینا کے ذریعہ اکبر روڈ پر مختلف مقامات پر لگائے گئے ہیں۔(بشکریہ این ڈی ٹی وی)

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: انتباہ:مواد محفوظ ہے