مہاراشٹر

ڈی جے والی شادیوں کا نہیں پڑھائیں گے نکاح اور نہ ہی شریک رہیں گے,برتھ ڈے پارٹیوں پر بھی کیا ناراضگی کا اظہار ; کھام گاؤں شہر کے علمائے کرام کا متفقہ فیصلہ

کھام گاؤں (واثق نوید) : دین اسلام، اللہ تعالیٰ کا اتارا ہوا دین ہے جو پوری عالم انسانیت کئے رحمت ہے لیکن افسوس آج بیشتر مسلمان دینی تعلیمات کے خلاف عمل پیرا ہیں ، جن میں خصوصاً شادی بیاہ کے موقع پر غیر شرعی رسومات و خرافات دیکھنے میں آرہی ہیں۔ نکاح اسلام میں بہت ہی اہمیت کا حامل ہے بلکہ اسے عبادت قرار دیا گیا ، لیکن جس طریقے سے شادی بیاہ کے موقع پر دیگر خرافات کے ساتھ ڈی جے بجانا ، ناچنا گانا ، ایک معمول بنتے جارہا ہے اس سے نکاح کی برکات ختم ہوگئی ، جس کا نتیجہ شادی کے بعد ازدواجی زندگی میں مختلف مسائل اور پریشانیاں سامنے آرہے ہیں۔ اس غیر اسلامی حرکتوں پر کس طرح روک لگائی جائے اس فکر کو لیکر شہر کھام گاؤں کے علمائے کرام کی سرکردگی میں 12 مئی کو ایک مشاورتی مٹینگ بعد نماز عشاء آزاد نگر مسجد میں منعقد کی گئی تھی۔ جس میں ائمہ مساجد ، نمائندہ ٹرسٹیان مساجد ، معززین شہر ، سیاسی و سماجی کارکنان نیز مختلف دینی جماعتوں اور مکاتب فکر کے افراد نے شرکت کی ۔ جس میں متفقہ طور پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ جس شادی میں ڈی جے بجے گا ، ویڈیو گرافی کی جائے گی اس شادی میں شہر کا کوئی عالم دین ، کوئی مفتی ، کوئی حافظ ، کوئی بھی امام اس کا عقد نہیں پڑھائے گا۔ اور نہ ہی مسجد سے کسی قسم کے برتن انہیں دیے جائیں گے۔ اس موقع پر شہر میں تیزی سے نوجوانوں میں پھلتے ہوئے برتھ ڈے پارٹیوں کے کلچر کے خلاف بھی سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے اس کی روک تھام کے لیے سعی و جہد نیز ملت کے نوجوانوں میں اصلاح حال کی کوشش کرنے کا طے پایا ہے۔ اس ضمن میں شہر کی تمام مساجد میں جمعے کے خطبوں میں اس کا اعلان کیا گیا، اور عام سے بھی ایسی شادیوں کا بایکاٹ کرنے کی درخواست کی گئی، نیز شہر سطح پر اور محلوں کی سطح پر کمیٹیاں بنائی گئی جو اس پر عمل درآمد کرنے کے لئے کام کرے گی۔
علماء اکرام کے اس فیصلے کو عوام میں پسند کیا جارہا ہے۔ اور اس کے مثبت نتائج بھی دیکھنے کو مل رہے ہیں۔ گزشتہ دنوں شہر میں ہوئے ایک ولیمے میں ڈی جے بجنے پر عمائدین قوم و باشعور افراد بغیر کھانا کھائے اس محفل سے واپس لوٹ گئے۔ جس کی شہر بھر اور شوشل میڈیا پر خوب چرچا ہورہی ہے۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!