اہم خبریں

دیویندر فڈنویس کنگ سے کنگ میکر کیوں بنے ؛ ایکناتھ شندے کو سی ایم کا عہدہ کیوں ملا…؟ کیا ہے اس کے پیچھے کی منصوبہ بندی ؛ پڑھیں تفصیلی خبر

ممبئی: آج دوپہر کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران دیویندر فڈنویس نے وزیر اعلیٰ کے عہدے کی کمان باغی شیوسینا لیڈر ایکناتھ شندے کو سونپ دی۔ یہ بلاشبہ ایک چونکا دینے والا واقعہ تھا۔ چند گھنٹے پہلے تک سیاسی گلیاروں میں یہی بحث چل رہی تھی کہ دیویندر فڈنویس وزیر اعلیٰ بنیں گے اور ایکناتھ شندے ان کے نائب ہوں گے۔ آخر ایسا کیا ہوا کہ بی جے پی نے ایکناتھ شندے کو وزیر اعلیٰ بنانے کا فیصلہ کر لیا۔

بی جے پی کے ماسٹر اسٹروک کے پیچھے 10 بڑی باتیں:

1) بی جے پی ذرائع کے مطابق اس فیصلے کے پیچھے ایک ٹھوس حکمت عملی ہے۔
2) بی جے پی چاہتی ہے کہ لوگوں میں یہ پیغام جائے کہ یہ شیو سینا کی حکومت ہے۔
3) بی جے پی کی حکمت عملی یہ ہے کہ شیوسینا مکمل طور پر ایکناتھ شندے کے ہاتھ میں چلی جائے۔
4) ایکناتھ شندے کو وزیر اعلیٰ بنا کر ٹھاکرے خاندان کو شیو سینا سے الگ کیا جا سکتا ہے۔
5) فڈنویس کو مرکز کی سیاست میں لایا جا سکتا ہے۔
6) بی جے پی یہ پیغام دینا چاہتی ہے کہ مہاراشٹر میں اقتدار کی یہ تبدیلی شیوسینا کے اندرونی اختلافات کی وجہ سے ہوئی ہے۔
7) بی جے پی نے ایکناتھ شندے کو وزیراعلیٰ بنا کر ادھو ٹھاکرے سے بدلہ لیا۔ اہم بات یہ ہے کہ 2019 میں ادھو نے بی جے پی کو سی ایم نہیں بننے دیا۔
8) ایکناتھ شندے کی بطور وزیر اعلیٰ تقرری کے ساتھ ہی شیو سینا کے باقی لیڈر اب شندے کیمپ میں شامل ہو سکتے ہیں۔
9) بی جے پی کو اگلے انتخابات میں کامیابی کی توقع ہے۔
10) شیو سینا کے کمزور ہونے کی وجہ سے بی جے پی کا این سی پی کانگریس سے سیدھا مقابلہ
(بشکریہ این‌ ڈی ٹی وی)

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: