مہاراشٹر

ٹی ای ٹی بدعنوانی معاملے میں ہوگی بڑی کاروائی ؛ 7 ہزار 880 افراد کی جائے گی نوکریاں ؛ خدمات انجام دے رہے افراد کے خلاف بھی ہوگی کارروائی !

پونے: (کاوش جمیل نیوز) :ریاستی امتحانی کونسل نے ٹی ای ٹی (ٹیچر کی اہلیت ٹیسٹ اسکام) کے معاملے میں بڑی کارروائی کی ہے۔ کونسل نے 7 ہزار 880 امیدواروں کے خلاف کارروائی کی ہے۔ یہ سبھی آئندہ ٹیچر اہلیت کے امتحان میں شرکت نہیں کر سکیں گے۔
سال 2019-20 میں اساتذہ کی اہلیت کے امتحان میں بدعنوانی پائی گئی تھی۔ اس معاملے میں پونے سائبر پولس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی گئی تھی۔ اس گھوٹالے میں ایجوکیشن کونسل کمشنر تکارام سوپے کو گرفتار بھی کیا گیا تھا۔
یہی نہیں بلکہ کئی کروڑ مالیت کے اثاثے سائبر پولیس کے ہاتھ لگ گئے۔ ان تمام امیدواروں کے خلاف چارج شیٹ پونے سیشن کورٹ میں پیش کی گئی۔ جس کے بعد انتظامیہ متعلقہ امیدواروں کے خلاف نااہلی کی کارروائی کرنے جارہی ہے، آج یہ کارروائی بھی کی گئی۔ ایکشن لینے والے 7 ہزار 880 امیدواروں میں سے جو حاضر سروس ہیں ان کو فارغ کر دیا جائے گا۔
ٹیچر اہلیت ٹیسٹ گھوٹالے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ایک سنسنی خیز بات سامنے آئی۔ TET میں نااہل ہونے والے 7880 امیدواروں کو پیسے دے کر پاس ہونے کا انکشاف ہوا ہے، امتحانی کونسل نے ان امیدواروں کے خلاف بڑی کارروائی کی ہے، ان 7880 امیدواروں میں سے 293 امیدوار ایسے ہیں جنہوں نے جعلی سرٹیفکیٹ تیار کیا تھا اور یہ آج سروس میں ہیں اُن کو بھی برطرف کیا جائے گا.
آج مہاراشٹر اسٹیٹ ایگزامینیشن کونسل نے 480 صفحات کا پرچہ جاری کیا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ کونسل نے بدعنوانی کے مرتکب 7880 امیدواروں کی فہرست کا اعلان کیا ہے۔ امتحان میں شامل ہونے والے امیدواروں کا امتحان منسوخ کر دیا گیا ہے۔ جن کی تقرری ہوئی ہے ان کی تقرریاں منسوخ کر دی جائیں گی۔
اساتذہ کی اہلیت کے امتحان 2019 (19 جنوری 2020) کے امتحان میں بدعنوانی کی وجہ سے، بدعنوانی میں ملوث امیدواروں کو فوری طور پر برطرف کیا جانا چاہئے اگر ان کی تقرری درج کردہ جرم کے مطابق کی گئی ہے۔ اور اس خط میں احکامات دیئے گئے ہیں کہ مقرر کردہ محکمے اس کا نوٹس لیں۔
امتحانی کونسل کی طرف سے بدعنوانی میں ملوث امتحانی امیدواروں کے خلاف جاری کردہ حکم نامہ مہاراشٹر اسٹیٹ ایگزامینیشن کونسل کی ویب سائٹ www.mscepune.in اور https://mahatet.in پر شائع کیا گیا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ محکمہ تعلیم کی کارروائی سے کئی لوگ متاثر ہوں گے۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: