مہاراشٹر

آپ تاریخ کے صفحات کو پھاڑ سکتے ہیں لیکن تاریخ بدل نہیں سکتے ….. رکن پارلیمنٹ سید امتیاز جلیل؛ ٹی وی 9 مراٹھی کو دیئے انٹرویو میں کہا اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن کا اگلا میئر ایم آئی ایم کا ہوگا ؛ بی جے پی سمیت شیوسینا،کانگریس اور این سی پی پر بھی کی تنقید ؛ پڑھیں تفصیلی خبر

اورنگ آباد: (کاوش جمیل نیوز) :ایم پی امتیاز جلیل نے بڑا بیان دیا ہے کہ اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن کا اگلا میئر ایم آئی ایم سے ہوگا۔ انہوں نے یہ بیان آج دہلی میں TV9 سے بات چیت کرتے ہوئے دیا۔ اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن میں، جسے گزشتہ کئی سالوں سے شیوسینا کا گڑھ سمجھا جاتا ہے، حکمراں شیو سینا میں بڑی پھوٹ پڑ گئی ہے۔ ایم پی امتیاز جلیل نے بیان دیا ہے کہ بی جے پی نے ہی شیوسینا میں جھگڑا پیدا کیا ہے اور ممبئی میونسپل کارپوریشن ملنے کے بعد بی جے پی کے اصلی ارادے سامنے آئیں گے۔ ایم آئی ایم ٹی آر پی حاصل کرنے کی بات کرتی ہے، ایم آئی ایم بی جے پی کی بی ٹیم ہے، الزامات اکثر لگائے جاتے ہیں۔ عبدالستار نے وزیر اعلیٰ کے دورہ اورنگ آباد کے دوران ایسے الزامات لگائے تھے۔ اسے کھاؤ جلیل نے جواب دیا۔ انہوں نے یہ انتباہ بھی دیا کہ اورنگ آباد کے نام کی تبدیلی کی اب بھی مخالفت ہے اور صرف سیاسی فائدے کے لیے شہر کا نام تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔
کانگریس اور این سی پی پر تنقید کرتے ہوئے امتیاز جلیل نے کہا کہ کانگریس اور این سی پی ضرورت کے مطابق سیکولر بن جاتے ہیں۔ لیکن جب سیاست کی بات آتی ہے تو ایم آئی ایم پر بی جے پی کی بی ٹیم ہونے کا الزام لگایا جاتا ہے۔ لیکن اب مسلمانوں کا بڑا ووٹ بینک کانگریس اور این سی پی سے چلا گیا ہے. میں آج اس وقت آیا ہوں جب این سی پی کے صدر شرد پوار نے دہلی میں میٹنگ بلائی تھی۔ یہ بھی جان لیں کہ نائب صدر کے عہدے کے انتخاب کا ہم نے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا ہے۔
بی جے پی اور شندے سینا کے عظیم اتحاد پر بات کرتے ہوئے رکن پارلیمنٹ امتیاز جلیل نے کہا کہ بی جے پی صرف شیوسینا کا استعمال کر رہی ہے۔ ان کا مقصد ممبئی میونسپل کارپوریشن پر اقتدار حاصل کرنا ہے۔ ایک بار ممبئی پر قبضہ ہو گیا تو معلوم نہیں کہ وہ کسی کو کہاں چھوڑ دیں گے۔ بی جے پی شیوسینا میں دو دھڑوں کو توڑکر بی جے پی ممبئی میونسپل کارپوریشن پر قبضہ کرنا چاہتی ہے۔ اس کے لیے انہوں نے شیوسینا میں جھگڑا پیدا کر دیا۔ اور اس میں بی جے پی کامیاب ہوئی ہے۔
سمبھاج نگر کا نام تبدیل کرنے کی بات کرتے ہوئے ایم پی امتیاز جلیل نے کہا، ‘میں آج بھی اورنگ آباد شہر کو سمبھاجی نگر کا نام بدلنے کے خلاف ہوں۔ میں سمبھاجی راجے کے لیے عزت رکھتا ہوں۔ جس شہر میں آٹھ دن پانی نہ ہو وہاں سیاسی فائدے کے لیے شہر کا نام بدلنے کی ہوڑ لگی ہے۔ مسلمان اورنگ زیب کی پیروی نہیں کرتے۔ یہ تاریخ کا حصہ ہے۔ آپ تاریخ کے صفحات پھاڑ سکتے ہیں لیکن تاریخ نہیں بدل سکتے۔
وزیر اعظم نریندر مودی نے ہر گھر ترنگا مہم میں سب سے اپنی ڈی پی میں ترنگا لگانے کی اپیل کی ہے۔ اس پر ایم پی امتیاز جلیل نے تنقید کی۔ نریندر مودی آپ کے اور میرے پیسوں سے پبلسٹی کر سکتے ہیں۔ ہم ڈی پی پر جھنڈا نہیں لگاتے۔ ترنگا ہمارے خون میں شامل ہے۔ مودی کی تصویر بھی ویکسینیشن پر ہے۔ اپنے گھر پر جھنڈا نہ لگائیں تو کیا غدار سمجھیں گے؟ وہ میرا گھر دیکھنے آئیں گے چاہے جھنڈا لگائیں یا نہ لگائیں… میں 2014 سے 15 اگست کو ترنگا یاترا نکال رہا ہوں۔اور اس کو دیکھ ہی نریندرمودی اس طرح کی مہم چلارہے ہیں. مزید ایم پی امتیاز جلیل نے کہا کہ ایک مسلمان ٹوپی پہن کر گاڑیوں پر ترنگا لہراتے ہے۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: