اہم خبریں

بڑی خبر: TET گھوٹالہ کی آنچ سابق وزیرعبدالستار تک پہنچی، دونوں لڑکیوں کا سرٹیفکیٹ منسوخ

پونے: (کاوش جمیل نیوز) :مہاراشٹرا اسٹیٹ ایگزامینیشن کونسل کے ذریعہ کرائے گئے ٹیچر اہلیت ٹیسٹ (ٹی ای ٹی) گھوٹالہ کیس کے دھاگے سیدھے سلوڑ تک پہنچ گئے ہیں۔ امتحانی کونسل کی طرف سے جو فہرست جاری کی گئی ہے اس میں شامل تمام نااہل لوگوں نے اہل ہونے کے لیے سوپے کو رقم ادا کی تھی۔ تاہم، نااہل امیدواروں نے سوپے سے اہلیت کا سرٹیفکیٹ حاصل کیا تھا۔ ان امیدواروں میں سابق وزیرعبدالستار کی بیٹیوں حنا اور عظمیٰ کے نام سامنے آئے ہیں۔ یہ بھی سمجھا جاتا ہے کہ ان دونوں کا سرٹیفکیٹ منسوخ کر دیا گیا ہے۔
حنا اور عظمیٰ دونوں ٹیچربیٹیاں سابق وزیرعبدالستار کی ہیں اور انہیں 2020 میں نااہل قرار دیا گیا ہے۔ یہ دونوں لڑکیاں سائبر پولیس اور ایگزامینیشن کونسل کی جانب سے جاری کردہ فہرست میں شامل ہیں۔ لیکن عظمیٰ اور حنا نے کس ایجنٹ کو رقم ادا کی یہ ابھی تک خفیہ ہے۔
اس فہرست میں اورنگ آباد ضلع کے کچھ امیدوار شامل ہیں اور فہرست کے اعلان کے بعد بدعنوانی میں ملوث امیدواروں کے نام بھی سامنے آئے ہیں۔ اس ٹی ای ٹی گھوٹالے میں سلوڑ کے ایم ایل اے کی دو بیٹیاں، سابق وزیر مملکت برائے ریونیو عبدالستار، حنا کوثر عبدالستار شیخ اور عظمیٰ ناہید عبدالستار شیخ بھی شامل ہیں۔ بتایا گیا کہ عبدالستار کے سیل میں سات تعلیمی ادارے ہیں اور یہ بچیاں بھی ان اداروں میں خدمات سرانجام دے رہی ہیں۔ اس لیے اب عبدالستار کی مشکلات بڑھنے کا خدشہ ہے۔
عبدالستار شنڈے فڑنویس حکومت میں وزارتی عہدہ حاصل کرنے کے خواہشمند ہیں۔ تاہم، اب جب کہ ٹی ای ٹی گھوٹالے کے دھاگے ان تک پہنچ چکے ہیں، انہیں سیاسی دھچکا لگنے کا امکان ہے۔ اگر یہ معاملہ بڑھتا ہے تو امکان ہے کہ عبدالستار وزیر کے طور پر اپنا موقع کھو دیں گے۔ (نیوز سورس مہاراشٹر ٹائمز)

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: