مہاراشٹر

ریاستی کابینہ کے وزیر عبدالستار کی بیٹی 40 ہزار سے زائد لے رہی تھی تنخواہ ؛ ٹی ای ٹی بدعنوانی میں بڑا انکشاف

اورنگ آباد: (کاوش جمیل نیوز) : ٹی ای ٹی گھوٹالے میں نو منتخب کابینہ وزیر عبدالستار کے بچوں کے نام سامنے آئے۔ اس کے بعد ایک بار پھر چونکا دینے والی معلومات سامنے آ رہی ہے ۔ یہ بات سامنے آئی ہے کہ عبدالستار کی بیٹی 2017 سے تنخواہ وصول کر رہی ہے۔ اس سے سیاست میں ہلچل مچ گئی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ مزید تحقیقات جاری ہیں۔
موصولہ اطلاعات کے مطابق حنا کوثر عبدالستار شیخ ٹی ای ٹی امتحان میں کوالیفائی نہ ہونے کے باوجود ان کی تنخواہ اتنی کیسے ؟ ایسا سوال اب اٹھ رہا ہے۔ اب اس حوالے سے الگ انکوائری کا مطالبہ کیا جا رہا ہے۔ کیونکہ محکمہ تعلیم کی دستاویزات کے مطابق حنا کوثر عبدالستار شیخ نے 2017 سے جولائی 2022 تک کی تنخواہ نکالی ہے۔
ان کی تنخواہ 40 ہزار ماہانہ سے زیادہ ہے۔ عبدالستار نے خود میڈیا کو بتایا تھا کہ ان کی بیٹی ٹی ای ٹی امتحان کے لیے نااہل ہے۔ اگر وہ نااہل تھیں تو کس معیار پر تنخواہ لے رہی تھیں؟ اس موقع پر یہ سوال بھی سامنے آرہا ہے۔
دریں اثنا، اسکول نے تنخواہ کا بل جمع کرایا ہے، جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ پوری طرح اہل ہے اور اس وجہ سے انہیں تنخواہ کی ادائیگی جاری ہے۔ اہلیت کے معیار کی تصدیق ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن کے دفتر سے کی جاتی ہے۔ پے رول سپرنٹنڈنٹ دلیپ جیولکر نے مطلع کیا ہے کہ ہمارے دفتر سے اسی کے مطابق تنخواہ کی سلپ جاری کی جاتی ہیں۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: