عالمی خبریں

یوکرین روس جنگ: روسی صدر پوتن نے یوکرین کی فوج سے موجودہ حکومت کا تختہ پلٹنے کاکیا مطالبہ

ماسکو: روسی صدر ولادی میر پوتن نے یوکرائنی فوج سے قیادت ہٹانے کا مطالبہ کردیا۔ پوتن کی طرف سے یہ بات ایک ایسے وقت میں کہی گئی ہے جب یوکرین کی فوج تنازع کے دوسرے دن روسی فوجیوں سے مقابلے کی کوشش کر رہی ہے۔ روسی حملے میں اب تک درجنوں افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ ولادیمیر پوتن نے یوکرین کی فوج سے ملک کی موجودہ حکومت کا تختہ پلٹنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے یوکرائنی قیادت کو "دہشت گرد” اور "منشیات کے عادی افراد اور نو نازیوں کا گروہ” قرار دیا۔ پوتن نے یہ بات یوکرین کی فوج سے ٹیلی ویژن پر خطاب میں کہی۔انھوں نے فوج پر زور دیا کہ وہ ’’اقتدار اپنے ہاتھ میں لے‘‘۔
صدر ولادیمیر زیلنسکی کی قیادت میں حکومت کا حوالہ دیتے ہوئے پوتن نے کہا کہ "ہمیں ایسا لگتا ہے کہ ہمارے لیے آپ (یوکرین کی فوج) سے منشیات کے عادی افراد اور نو نازیوں کے گروہ سے اتفاق کرنا آسان ہوگا۔” "یوکرینی قوم پرستوں” پر روسی افواج کو اکسانے کے لیے بڑے شہروں کے رہائشی علاقوں میں بھاری ہتھیاروں کی تعیناتی کا الزام۔ انہوں نے کہا کہ یوکرائنی "قوم پرست” یوکرین کے شہروں کے رہائشی علاقوں بشمول کیف اور شمال مشرقی شہر خارکیف میں راکٹ لانچروں کو تعینات کرنے کی تیاری کر رہے ہیں۔ یہی نہیں، پوتن نے یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی کی قیادت میں حکومت کو "دہشت گرد” اور "منشیات اور نو نازیوں کا گروہ” قرار دیا۔
خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق، کیف کے شمال میں اوبولونسکی ضلع میں، خوف زدہ شہری جان بچانے کے لیے سڑکوں پر بھاگتے ہوئے دیکھے گئے۔ اسی دوران شہر کے مرکز میں زور دار دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں جہاں لوگوں نے پہلی رات کرفیو اور بم دھماکوں کے سائے میں گزاری۔ اس سے قبل یوکرین کی وزارت دفاع نے آج دعویٰ کیا تھا کہ اس تنازعے میں اب تک 1000 سے زیادہ روسی فوجی مارے جا چکے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ‘روس کو اپنے وجود کے بعد سے کسی اور مسلح تصادم میں اتنا نقصان نہیں پہنچا ہو گا۔’
حملے کے دوران، یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے عزم ظاہر کیا ہے کہ وہ کیف میں ہی رہیں گے کیونکہ ان کی فوجیں روسی حملہ آوروں سے لڑ رہی ہیں۔ انہوں نے ایک ویڈیو پیغام میں خبردار کیا کہ "دشمن نے مجھے پہلے نمبر پر نشانہ بنایا ہے۔ میرا خاندان دوسرے نمبر پر ہے۔ میں دارالحکومت میں ہی رہوں گا۔ میرا خاندان بھی یوکرین میں ہی رہے گا،” انہوں نے ایک ویڈیو پیغام میں خبردار کیا۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!