اہم خبریں

ای ڈی افسر 20 لاکھ روپئے کی رشوت لیتے ہوئے گرفتار؛ کئی لوگوں کو بلیک میل کرنے کا شبہ

انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کے ایک افسر کو تمل ناڈو کے ایک سرکاری ملازم سے رشوت لیتے ہوئے گرفتار کیا گیا ہے۔ ریاستی محکمہ انسداد بدعنوانی نے ای ڈی کے ایک افسر کو 20 لاکھ روپے کی رشوت لیتے ہوئے گرفتار کیا۔ اس سے ہلچل پیدا ہوگئی ہے۔ گرفتار ای ڈی افسر کا نام انکت تیواری ہے۔ انکت کو 15 دسمبر تک عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا ہے۔
انکت تیواری کی گرفتاری کے بعد ضلع ویجیلنس اور انسداد بدعنوانی محکمہ نے مدورائی میں ای ڈی کے دفتر پر چھاپہ مارا۔ ساتھ ہی تیواری کی رہائش گاہ کا بھی معائنہ کیا گیا ہے۔ ذرائع نے انڈیا ٹوڈے کو بتایا کہ انکت تیواری پر بہت سے لوگوں کو بلیک میل کرنے اور کروڑوں کی رشوت لینے کا شبہ ہے۔ اس کے علاوہ تیواری نے ای ڈی حکام کو رشوت دی ہے۔ تیواری سے کچھ دستاویزات بھی ضبط کیے گئے ہیں۔ مدورائی اور چنئی کے ای ڈی حکام سے اس معاملے میں پوچھ گچھ ہونے کا امکان ہے۔
کیا ہے معاملہ !
ڈنڈیگل میں ایک سرکاری ملازم سے انکت تیواری نے 29 اکتوبر کو بے حساب اثاثوں کے معاملے میں رابطہ کیا تھا۔ یہ کیس پہلے ہی بند تھا۔ لیکن، انکت نے سرکاری ملازم کو بتایا کہ وزیر اعظم کے دفتر (پی ایم او) نے ای ڈی کو معاملے کی جانچ کرنے کی ہدایت دی ہے۔
اس کے بعد انکت نے ملازم سے مزید تفتیش کے لیے 30 اکتوبر کو مدورائی میں ای ڈی کے دفتر میں حاضر ہونے کو کہا۔ 30 اکتوبر کو جب عملہ وہاں پہنچا تو انہوں نے تحقیقات روکنے کے لیے 3 کروڑ روپے رشوت طلب کی۔ لیکن، بعد میں انکت نے ملازم سے 51 لاکھ روپے کا مطالبہ کیا۔

kawishejameel

chief editor

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: مواد محفوظ ہے !!

Discover more from

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading