مہاراشٹر

بڑی خبر! این سی پی اجیت پوار کی ! الیکشن کمیشن کا حیران کن فیصلہ

نئی دہلی: (کاوش جمیل نیوز) :این سی پی میں بڑی پھوٹ پڑ ی۔ اس لیے اصل فریق کون ہے اس کا فیصلہ الیکشن کمیشن کے پاس تھا۔ الیکشن کمیشن نے واضح کر دیا ہے کہ اجیت پوار گروپ ہی حقیقی این سی پی پارٹی ہے۔ الیکشن کمیشن کے اس فیصلے کی وجہ سے شرد پوار گروپ کے لیے اسے بڑا دھچکا مانا جا رہا ہے۔ پی ٹی آئی نے اس کی اطلاع دی ہے۔ جولائی کے مہینے میں این سی پی پارٹی میں پھوٹ پڑ گئی تھی۔ اس وقت کے اپوزیشن لیڈر اجیت پوار نے حکمران مہایوتی کے ساتھ نائب وزیر اعلیٰ کے عہدے کا چارج سنبھالا۔ کچھ ایم ایل اے بھی ان کے ساتھ گئے۔ ان کے ساتھ تقریباً 7 وزراء نے بھی اپنے عہدے کا حلف لیا۔ شیو سینا کی طرح این سی پی بھی تقسیم ہوگئی اور یہ معاملہ الیکشن کمیشن کے پاس بھی گیا۔ این سی پی کی تقسیم کا معاملہ گزشتہ چھ ماہ سے الیکشن کمیشن کے پاس زیر التوا تھا۔ گزشتہ چھ ماہ میں الیکشن کمیشن کے سامنے اس معاملے کی 10 سماعتیں ہوئیں۔ ان میں سے ہر ایک سماعت میں شرد پوار موجود تھے۔
الیکشن سے پہلے اجیت پوار گروپ اور شرد پوار گروپ کی طرف سے مانگے گئے تمام دستاویزات کو پورا کر دیا گیا۔ آخر کار اجیت پوار گروپ کو پارٹی کا نشان اور این سی پی کا پارٹی نام دیا گیا ہے۔ اس لیے الیکشن کمیشن نے شرد پوار گروپ کو ہدایت دی ہے کہ وہ آئندہ راجیہ سبھا انتخابات میں پارٹی کے نشان اور پارٹی کے نام کے لیے تین آپشن تجویز کریں۔
الیکشن کمیشن کا یہ فیصلہ حیران کن ہے۔ این سی پی کے بانی اور قومی صدر شرد پوار کے ہاتھوں سے پارٹی چھین لی جا رہی ہے۔ چونکہ ملک کے تقریباً تمام آئینی ادارے اپنی خودمختاری کھو چکے ہیں، اس سے ظاہر ہے کہ غیر معقول فیصلے دے کر تکنیکی وجوہات کو سامنے رکھا گیا ہے۔ ہم اس نتیجہ کا تفصیلی مطالعہ کریں گے اور اس پر تبصرہ کریں گے۔ ہم اس فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کریں گے اور ہمیں یقین ہے کہ ملک کی سپریم کورٹ ہمیں انصاف دے گی”، اس طرح‌اظہار خیال جینت پاٹل نے کہا.. دیکھنا دلچسپ ہوگا آگے کیا ہوتا ہے…
jamsham hair oil all distributors

kawishejameel

chief editor

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: مواد محفوظ ہے !!

Discover more from

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading