مہاراشٹر

اورنگ آباد،عثمان آباد حلقوں کے ناموں سے متعلق الیکشن کمیشن کا اہم فیصلہ ؛ پڑھیں تفصیلی رپورٹ

اورنگ آباد ضلع کا نام چھترپتی سمبھاجی نگراور ضلع عثمان آباد کا نام دھاراشیو رکھ دیا گیا۔ ریلوے اسٹیشن سے لے کر شہر کے مختلف مقامات اور ضلع میں ہر جگہ نئے نام دیے گئے ہیں۔ لیکن لوک سبھا اوراس کے بعد ہونے والے اسمبلی انتخابات میں کیا نام ہونے والے ہیں؟ کیا اسے دھاراشیو اور لوک سبھا اور ودھان سبھا حلقوں کا نام دیا جائے گا؟ یا اس کا نام چھترپتی سمبھاج نگر لوک سبھا اور ودھان سبھا حلقہ ہوگا؟ اس سوال کا جواب دیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے واضح کیا ہے کہ آئندہ انتخابات میں عثمان آباد حلقہ اور اورنگ آباد حلقہ ہی نام ہوں گے۔
آئندہ لوک سبھا اوراس کے بعد ہونے والے ودھان سبھا انتخابات میں دھاراشیو لوک سبھا اور ودھان سبھا حلقہ کا نام عثمان آباد ہوگا۔ اس کے علاوہ چھترپتی سمبھاج نگر حلقوں کا نام اورنگ آباد ہی رہے گا۔ پیرسمین کمیشن کے قوانین کے مطابق مردم شماری 2026 کے بعد ہوگی۔ اس کے بعد حلقے کا نام اور تنظیم نو کی جائے گی۔ یعنی 2026 تک اس حلقے کا نام عثمان آباد اور اورنگ آباد ہی رہے گا۔
لوک سبھا اور ودھان سبھا حلقوں کے نام تبدیل کرنے کی تجویز 28 نومبر 23 کو الیکشن کمیشن کو بھیجی گئی تھی۔ اس خط کے مطابق مرکزی الیکشن کمیشن نے جواب دیا ہے۔ اس کی وجہ سے عثمان آباد اوراورنگ آباد کا نام ایک ہی رہے گا۔ انتخابات کے لیے دونوں شہروں کے نام ایک ہی رہنے کی وجہ سے سیاسی رہنما، جماعتیں اور انتظامیہ آمنے سامنے ہوں گے۔
شہروں کے نام عثمان آباد اور اورنگ آباد تبدیل کر دیے گئے۔ اس کے بعد کچھ لوگوں نے اعتراض کیا۔ کچھ عدالت گئے۔ درخواست گزاروں نے کابینہ کے فیصلے پر فوری روک لگانے کا مطالبہ کیا۔ لیکن عدالت نے یہ مطالبہ ماننے سے انکار کر دیا۔
Aurangabad distributor jamsham hair oil

kawishejameel

chief editor

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: مواد محفوظ ہے !!

Discover more from

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading