مہاراشٹر

کوتھلی تعلقہ موتلہ ضلع بلڈھانہ کے شیخ انصار کا حادثہ میں ہوا انتقال ؛ سڑک کے کام میں ٹھیکیدار کی غفلت ولاپرواہی کے سبب نوجوان کا ہوا انتقال ؛ گاؤں میں غم کی لہر

بلڈھانہ: (کاوش جمیل نیوز) : فی الحال کئی جگہوں پر اندرونی سڑک کا کام جاری ہے۔ ٹھیکیدار کی غفلت کے باعث اس میں وارننگ نوٹس بورڈ نہیں لگایا گیا۔ جس کے سبب حادثہ رونما ہوا اوربلڈھانہ ضلع کےتعلقہ موتلہ کے کوتھلی کا نوجوان شکار ہوگیا. تیز رفتار موٹرسائیکل حادثے میں 25 سالہ نوجوان کا انتقال ہوگیا.
موصولہ اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ 21 جنوری کی رات موتلہ کے دیہی اسپتال کے سامنے زیر تعمیر پل کے قریب پیش آیا۔اس حادثہ میں ہوئے جاں بحق نوجوان کا نام شیخ انصار ہے۔ موتلہ تعلقہ کے کوتھلی میں شیخ انصار شیخ موسیٰ 21 جنوری کو کام کے سلسلے میں موتلہ آیا تھا۔ یہاں دیہی اسپتال کے سامنے پل کا کام جاری ہے۔ اس لیے پل کے دونوں طرف سڑک کے درمیانی حصے تک ایک افقی پشتہ تعمیر کیا گیا۔ رات کا وقت تھا جب انصار کاٹن مارکیٹ روڈ سے واپس آرہا تھا۔ اس لیے وہ اندھیرے میں پل کے پار مُرم پشتے کو نہیں دیکھ سکا۔ اس کوشیخ انصار کی موٹر سائیکل نے زوردار ٹکر ماری۔ اس کے بعد موٹر سائیکل پر سوار انصار نیچے گرپڑا اور اس کے سر پر شدید چوٹیں آئیں۔ بورکھیڈی تھانیدار سارنگ نوالکر، وجے پیتھانے، پوکو ابھینندن شندے، دیپک پوار موقع پر پہنچے اور یہاں کے ساکنان کی مدد سے زخمی انصار کو علاج کے لیے بلڈھانہ منتقل کیا۔ ڈاکٹر نے اسے وہاں چیک کیا اور مردہ قرار دے دیا۔
موتلہ میں دیہی ہسپتال کے سامنے پل کا کام جاری ہے۔ اس لیے اس جگہ پر مُرم کا ایک ٹرانسورس ڈیم رکھا گیا۔ متعلقہ افراد نے کوئی بورڈ نہیں لگایا کہ یہاں کام ہو رہا ہے۔ نیز، چونکہ رات کا وقت تھا، اس لیے یہ حادثہ اس لیے پیش آیا کہ موٹرسائیکل سوار شیخ انصارمُرم کراس ڈیم کو نہیں دیکھ پایا۔ اگر روڈ ورک سائن بورڈ لگا ہوتا تو موٹر سائیکل کا حادثہ پیش نہ آتا۔ متوفی کے لواحقین نے متعلقہ ٹھیکیدار پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ موٹرسائیکل سوار شیخ انصار کی جان بچ جاتی اگر سڑک کا کام کررہے ٹھیکیداراس طرح کی لاپرواہی نہ کرتا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ وہ حادثے کی تحقیقات کر کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کرے گی۔ (بشکریہ مہاراشٹر ٹائمز)
jamsham hair oil buldhana distributor

kawishejameel

chief editor

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: مواد محفوظ ہے !!

Discover more from

Subscribe now to keep reading and get access to the full archive.

Continue reading