مہاراشٹر

جلگاؤں شہر راشٹروادی کانگریس کےشہر صدر سمیت تین سو عہدیداران کے استعفے لیڈران کے سامنے بڑا چلینج ؟

جلگاؤں (سعیدپٹیل)راشٹروادی کانگریس میں اندرون کا اختلاف سامنے آنا شروع ہوگیا ہے۔شہرصر
ابھیشیک پاٹل ان کا ریاستی سطح پر تقرر کرکے شہرصدر کے عہدے سے دور کرنے کی کوشش شروع ہوتے ہی پارٹی ورکروں میں غصہ پایاجاتا ہے۔ابھیشیک پاٹل نے استعفیٰ دیتے ہی شہر کے ٢٥ سیل میں سے ١٢ سیل کے صدور سمیت ٣٠٠ عہدیداران نےفوراً استعفے دےدیئے۔گذشتہ سترہ مہینوں سے پارٹی بہت اچھے طریقے سے کام کررہی تھی۔ایسے میں ہماری کیا غلطی ہوئی۔؟ ایسا سوال اس وقت ورکروں نے پارٹی کی لیڈران سے کیا ہے۔خبروں کے مطابق آئندہ منگل کے روز سبھی صدور ریاستی صدر سے ملاقات کرنے کےلیۓ ممبئ روانہ ہونے والے ہیں۔راشٹروادی کانگریس پارٹی میں سابق وزیر ایکناتھ راؤ کھڈسے انھوں نے گذشتہ گیارہ ماہ قبل شمولیت اختیار کی تھی۔اس کے بعد چند دنوں میں ہی راشٹروادی کانگریس پارٹی میں تنظیمی تبدیلی کی قیاس آرائیاں شروع ہوگئ تھی۔آخر راشٹروادی میں تبدیلی کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔گذشتہ روز شہر صدر ابھیشیک پاٹل کو ریاستی سطح کے عہدے کا تقرری خط ملا ہے۔جس کا مطلب یہ ہوا کہ ابھیشیک پاٹل کو شہر صدر کے عہدے سے ہٹایا جانا طئے ہے۔جس کی وجہ سے ابھیشیک پاٹل نے ناراض ہوکر فوری طور پر شہر صدر کے عہدے کا استعفیٰ ریاستی صدر جینت پاٹل انھیں بھیج دیا ہے۔اور آئندہ بھی عام ورکر کے طور پر پارٹی کا کام کرتا رہوں گا۔اس طرح کی اطلاع دیتے ہوئے ریاستی عہدہ قبول کرنے سے انکار کردیا ہے۔شہر صدر کا استعفیٰ دینے کے بعد ان کی قیادت میں سرگرم عمل ١٢ سیل کے صدور سمیت ٣٠٠ ورکر و عہدیداران نے بھی استعفیٰ دینے کا اعلان گذشتہ روز راشٹروادی کانگریس کے ضلع دفتر کے سامنے ذرائع سے بولتے ہوئے کیا۔شہر صدر ابھیشیک پاٹل انھوں نے استعفیٰ دینے کی وجہ سے پوری ورکینگ کمیٹی برخاست ہوگئ ہیں۔اس کے بعد جمعہ کو شہر سیکریٹری کنال پوار ،یوتھ راشٹروادی کے شہر صدر سوپنیل نیماڈے ،سماجی انصاف شعبہ کے صدر جیتیندر چانگرے ، اکشۓ ونجاری ، آروہی نیوے ،ترجمان سیل کے صدر رمیش بھولے سمیت ١٢ سیل کے صدور سمیت ٣٠٠ عہدیداران نے استعفے دیئے ہیں۔

kawishejameel

Jameel Ahmed Shaikh Chief Editor: Kawish e Jameel (Maharashtra Government Accredited Journalist) Mob: 9028282166,9028982166

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: Content is protected !!